چین میں انسداد غربت کی موئثر کوششوں کی بدولت اسکول چھوڑنے والے دو لاکھ سے زائد طلباء کی اسکولوں میں واپسی

2021-04-06 17:49:34
شیئر:

چین میں انسداد غربت کی موئثر کوششوں کی بدولت اسکول چھوڑنے والے دو لاکھ  سے زائد  طلباء کی اسکولوں میں واپسی_fororder_src=http_%2F%2Fimg.tianfupic.com%2F2020%2F0402%2F20200402112456375&refer=http_%2F%2Fimg.tianfupic

چھ اپریل کو  چین کی ریاستی کونسل کے انفارمیشن آفس نے ایک وائٹ پیپر جاری کیا جس کا موضوع رہا "انسداد  غربت :چین کے تجربات اور  خدمات "۔
وائٹ پیپر میں بتایا گیا کہ چینی حکومت نے غریب علاقوں میں تعلیم کے شعبےمیں بھاری سرمایہ کاری کی ہے تاکہ تعلیم کے ذریعے غربت کا مکمل خاتمہ کیا جا سکے۔
وائٹ ​​پیپر میں کہا گیا ہے کہ چین نے غربت زدہ علاقوں میں اسکولوں کی بہتری ، اساتذہ کی بہبود اور مالی امداد کے لئے بھرپور کوششیں کی ہیں۔غریب خاندانوں کے دو لاکھ سے زائد طلباء جنہوں نے غربت کی وجہ سے  لازمی تعلیم ادھوری چھوڑ دی تھی ، اسکولوں میں واپس آئے ہیں۔اس کے علاوہ   غریب خاندانوں کے 8 ملین سے زائد جونیئر اور ہائی اسکول کے فارغ التحصیل طلبا  کو پیشہ ورانہ تعلیم اور تربیت فراہم کی گئی ہے۔   اعلیٰ تعلیمی اداروں میں  دیہی اور غریب علاقوں کے 700،000 سے زائد طلباء کا اندراج کیا گیا ہے ، اور نسلی قومیتوں کے گنجان آباد علاقوں میں قومی زبان کی تعلیم و تربیت کے ذریعے  3.5 ملین سے زائد مقامی باشندوں کو  روزگار  کے مواقع ملے ہیں۔