چین کے وزیر اعظم لی کھہ چھیانگ کی جانب سے پریس کانفرنس کا انعقاد

2018-03-20 12:57:20
Comment
شیئر
شیئر Close
Messenger Messenger Pinterest LinkedIn


 بیس تاریخ کی صبح  چین کے وزیر اعظم لی کھہ چھیانگ   نے   بیجنگ میں چینی اور  غیرملکی نامہ نگاروں سے ملاقات کی اور  ان کے سوالات کے   جوابات دیے۔ وزیراعظم لی کھ چھیانگ نے  کہا کہ گزشتہ چالیس برسوں میں چین کی   اقتصادی و سماجی ترقی کا  چینی حکومت کی کھلی پالیسی سے قریبی  تعلق ہے۔کھلی پالیسی   چین کی بنیادی قومی پالیسی ہے۔چین آزادانہ تجارت کی حمایت کرتارہے گا  اور دنیا کے   لئے چین کا دروازہ  کھولتا رہے گا۔
وزیر اعظم نے کہا کہ چینی حکومت درآمد شدہ    مصنوعات پر عائد  ٹیرف کو مزید کم کر دے گی۔، کینسر کے علاج والی ادویات پر عائد    ڈیوٹی کو مکمل طور پر ختم کیا جائےگا ۔بزرگوں کی دیکھ بھال ، طب و صحت ، تعلیم   اور  مالیات سمیت دیگر  شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کی جائے   گی۔ جناب لی کھہ چھیانگ نے اس بات پر زور دیا کہ چینی حکومت چینی اور  غیرملکی   صنعتی و کاروباری اداروں کے لئے شفاف  اور  مساویانہ  مارکیٹ  کے قیام  کو فروغ   دیتی رہی ہے  اور  متعلقہ سروس کے معیار کو مسلسل بلند کیا   جائیگا۔

اس موقع پر وزیر اعظم لی کھہ چھیانگ نے ملک میں مالیاتی خطرات کے امکانات کو مسترد کرتے ہوئے مزید کہا کہ چین نظامیاتی مالیاتی خطرات سے نمٹنے کے لیے قبل از وقت اقدامات کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ چینی معیشت کی بنیاد مضبوط ہے اور مالیاتی شعبہ مستحکم ہے۔

جناب لی نے کہا کہ چین کا مجموعی اقتصادی حجم اسی ٹریلین آر ایم بی سے زائد تک جا پہنچا ہے  اور مالیاتی اداروں میں مالیاتی اثاثوں کی مجموعی مالیت دو سو پچاس ٹریلین آر ایم بی سے زائد تک جا پہنچی ہے ۔


شیئر

Related stories