نیوز

چینی صدر شی جن پھنگ کی جانب سے دو ہزار اٹھارہ دی بیلٹ اینڈ روڈ علمی اثاثوں کے حوالے سے اعلی سطحی کانفرنس پر مبارک باد کا پیغام

​دو ہزار اٹھارہ دی بیلٹ اینڈ روڈ علمی اثاثوں کے حوالے اعلی سطح کی کانفرنس اٹھائیس تاریخ کو بیجنگ میں شروع ہوئی۔ اس موقع پر چین کے صدر شی جن پھنگ نے کانفرنس کے منتظمین کےنام مبارک باد کا پیغام بھیجا۔

سنگیانگ دی بیلٹ اینڈ رود انیشیٹو کے تحت اشیا کی نقل و حمل کا مرکز بن گیا ہے

​دی بلیٹ اینڈ رود انیشیٹو کے تحت شاہراہ  ریشم کی اقتصادی پٹی کی تعمیر  کے ساتھ ساتھ  سنگیانگ مغرب کی جانب چین کو دنیا کے ساتھ ملانے والے دروازے کی مانند بن گیا ہے ۔

دی بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو زمانے کے دھارے کی رہنمائی کر رہا ہے : سنہوا نیوز ایجنسی کا تبصرہ

​دو ہزار تیرہ میں چینی صدر شی جن پھنگ نے دی بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو  پیش کیا اور اب پانچ سال ہو چکے ہیں۔سنہوا نیوز ایجنسی کی جانب سے ایک تبصرے میں لکھا ہوا ہے کہ  پانچ برسوں میں بیلٹ اینڈ روڈ کی تعمیر کو اہم ثمرات حاصل ہوئے ہیں۔

سری لنکا میں شاہراہ رشیم کے بحری راستے کی باقیات دریافت

​اکیس اگست کو چین کے شنگھائی میوزیم سے تعلق رکھنے والے ماہر آثار قدیمہ نے سری لنکا کے شمالی ساحلی شہر جافنہ کے قریب آلالپڈی کے آثارقدیمہ میں  شاہراہ رشیم کے  بحری راستے کے اہم باقیات دریافت کیے ہیں۔ 

چینی وزیرخارجہ وانگ ای کی منگولیا کے ہم منصب سے ملاقات

​تیئیس اگست کو چین کے ریاستی کونسلر اور وزیرخارجہ وانگ ای نے ایولان بیٹر میں منگولیا کے ہم منصب ڈیمڈین سوگ باٹرکے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں شرکت کی۔چینی وزیرخارجہ وانگ ای نے میڈیا کو بتایا ہے کہ "دی بیلٹ اینڈ روڈ "انیشیٹو ایک ایسا منصوبہ ہے، جس سے عالمی برادری فائدہ اٹھا سکتی ہے ۔یہ انیشیٹو  نہ تو کوئی "مارشل پلان" ہے اور نہ ہی حغرافیائی حکمت عملی کی منصوبہ بندی  ہے  بلکہ  چین کا  پیش کردہ"دی بیلٹ اینڈ روڈ" انیشیٹو ہمیشہ کی طرح جامع مشاورت، تعمیری شراکت اور مشترکہ مفادات کے اصولوں پر مبنی ہے۔

چین کی زرعی سائنس و ٹیکنالوجی کی مدد سے دی بیلٹ اینڈ روڈ سے وابستہ ممالک میں زراعت کی ترقی کا فروغ

​زراعت" دی بیلٹ اینڈ روڈ" سے وابستہ ممالک کی اقتصادی ترقی کی اہم بنیاد ہے۔چین کے ساتھ زراعت کے شعبے میں تعاون کرنا ان ممالک کی مشترکہ خواہش ہے۔

ہمبنٹوٹا بندرگاہ، چین اور سری لنکا کی مشترکہ کوششوں سے مستقبل میں اسٹار بندرگاہ بن جائےگی

 ہمبنٹوٹا بندرگاہ، چین اور سری لنکا کی مشترکہ کوششوں سے مستقبل میں اسٹار بندرگاہ بن جائےگیسری لنکا کے جنوبی ساحل پر واقع ہمبنٹوٹا بندرگاہ عمدہ جغرافیائی وقوع اور گہرے پانی کی وجہ سے ایک بین الاقوامی ٹرانزٹ مرکز اور  گہرے پانی کی حامل  بندرگاہ بننے

چین کے صوبے فو جیان کے کاروباری اداروں کی دی بیلٹ اینڈ روڈ کی ترقی میں کردار

​رواں سال "دی بیلٹ اینڈ روڈ "انیشٹیو کے آغاز کی پانچویں سالگرہ منائی جارہی ہے۔گزشتہ پانچ برسوں میں چین کے جنوبی صوبے فو جیان میں واقع کاروباری اداروں نے دی بیلٹ اینڈ روڈ سے وابستہ ممالک اور علاقوں کے درمیان باہمی روابط  کو فروغ دیتے ہوئے دی بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کی ترقی میں اپنا مثبت کردار ادا کیا ہے۔

دی بیلٹ ایںڈ روڈ انیشیٹو سے نیپالی سول ایوی ایشن کی ترقی کو فروغ دیا جائے گا

​دی بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو  کے تحت مختلف منصوبوں پر عملدرآمد کے ساتھ ساتھ حالیہ برسوں میں چین اور نیپال کے درمیان متعددمنصوبوں میں تعاون کیا جا رہا ہے۔دونوں ممالک کی مشترکہ سرمایہ کاری سے  قائم ہوئی  ہمالیہ ائر لائنز  چین-نیپال تعاون کی ایک مثال ہے۔

ارمچی: دور افتادہ سرحدی علاقے سے دنیا تک رسائی کے لیے مرکزی دروازہ بننے تک کا سفر

​اگست کے مہینے میں ارمچی کے مرکز نقل و حمل   سےجو ریل گاڑی سامان کی ایک بڑی کھیپ لے کر یورپ کی جانب روانہ ہوگی ،وہ اس مرکز کے قیام کے بعد سے اب تک چلنے والی ۱۴۴۸ ویں ریل گاڑی ہے ۔ 

دی بیلٹ اینڈ روڈ میں ہوائی نقل و حمل کا روشن مستقبل

​دی بیلٹ ایند رود انیشیٹو پیش کئے جانے کےبعد گزشتہ پانچ برسوں میں چین اور دنیا کے دوسرے ممالک کے درمیان اقتصادی و تجارتی تبادلوں میں نمایان  اضافہ ہوا ہے  ۔ اس  دوران ہوائی نقل و حمل کا کردار  بہت زیادہ اہمیت کا حامل رہا ہے   ۔ اس سے ہر لحاظ سےچین کے کھلے پن کو  مدد ملی ہے ۔ 

​چین اور برطانیہ مشترکہ طور پر دی بیلٹ اینڈ روڈ کی تعمیرکے عمل کو آگے بڑھائیں گے ۔ چینی وزیر خارجہ وانگ ای

چینی وزیر خارجہ وانگ ای نے تیس تاریخ کو بیجنگ میں برطانوی وزیر خارجہ جیریمی ہنٹ کے ساتھ نویں چین برطانیہ اسٹریٹیجک بات چیت کی صدارت کے بعد مشترکہ طور پر نامہ نگاروں سے ملاقات کی۔ 

HomePrev123NextEndTotal 3 pages