رائے

کووڈ-19 کی روک تھام کے حوالے سے چین کے تجربات سے عالمی برادری کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے ,سی آر آئی کا تبصرہ

تین تاریخ کو عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ایڈہانوم گیبریسس نے ایک نیوز بریفنگ میں کہا کہ دنیا بھر میں کووڈ-19کے تصدیق شدہ  کیسز کی تعداد 90893 رہی اور  3110 ہلاکتیں ہوئیں۔

امریکہ کی نام نہاد "آزادی صحافت" منافقت اور بالادستی کا آئینہ ہے ، سی آر آئی کا تبصرہ

دو مارچ کو امریکی محکمہ خارجہ نے اعلان کیا کہ رواں ماہ کی 13 تاریخ سے پانچ چینی میڈیا اداروں کے چینی ملازمین کی تعداد کو محدود کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ اس سے قبل امریکہ نے ان میڈیا اداروں کو"غیر ملکی مشن" قرار دیا تھا۔

چین کی اپنے عمل سے ہم نصیب معاشرے کی وضاحت : سی آر آئی کا تبصرہ

حال ہی میں نوول کرونا وائرس کوویڈ -انیس کی وبا دنیا کے ساٹھ سے زائد  ممالک میں ہو  چکی ہے ۔ عالمی برادری نے وبائی صورتحال پر قابو پانے کے ساتھ ساتھ چین کی بھر پور کوششوں کو بہتر انداز میں سمجھ لیا ہے ۔تبصرے میں کہا گیا ہے کہ  لوگوں نے دیکھا ہے کہ وبا پھوٹنے کے بعد

صحت عامہ کے مسئلے کو سیاسی دکانداری چمکانے کے لئے استعمال نہیں کرنا چاہیے:سی آر آئی کا تبصرہ

تازہ ترین اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ دو مارچ کی دوپہر تک ، دنیا بھر میں 60 سے زائد ممالک میں کرونا وائرس کی وبا  کی موجودگی پائی گئی ہے۔ اس تناظر میں عالمی ادارہ صحت نے

وبا کے اثرات عارضی ہیں، چین کی اقتصادی صورت حال پہلے سے زیادہ مستحکم ہوگی، سی آر آئی کا تبصرہ

چین میں نوول کرونا وائرس کی وبا پھوٹنے کے بعد کچھ کمپنیوں کو پیداوار بند اور معطل کرنے پر مجبور ہونا پڑا، جس کی وجہ سے بین الاقوامی صنعتی اور سپلائی چین میں کچھ خلل پڑا۔ کچھ امریکی عہدیداروں نے اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ چین کی "سپلائی چین" پر انحصار کم کرکے ایک نیا عالمی اتحاد بن

عالمی ماہرین کی جانب سے وباکے خلاف چینی اقدامات کی توثیق: سی آر آئی کا تبصرہ

چین نے نوول کرونا وائرس کوویڈ-انیس کی وبا کے پھیلاؤ اور روک تھام کے لئے انتہائی جرات مندانہ، بروقت اور فعال اقدامات اختیار کئے ہیں۔ تاریخ میں ان اقدامات کی مثال اس سے قبل نہیں ملتی۔ ان اقدامات کی تحسین اور توثیق انتیس فروری کو عالمی ادارہ صحت کی جانب سے جاری کی گئی ایک مشترکہ تحقیقاتی رپورٹ میں کی

چین کے خلاف باتیں کرنے والوں کو ایک بار پھر منہ کی کھانی پڑی، سی آر آئی کا تبصرہ

کئی عشروں سے ، کچھ مغربی اسکالرز اور میڈیا ادارے سیاسی مقاصد کے لئے نام نہاد "چین کے خاتمے" کے لمحات کی پیش گوئی کرتے رہے ہیں ، لیکن انہیں ہر بار ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا۔ نوول کرونا وائرس کوویڈ-انیس وبا کے پھیلاؤ کے بعد ان لوگوں کو ایک بار پھر لگا کہ انہیں اپنی پیش گوئیوں کو سچ کرنے کا م

امریکہ کی جانب سے عالمی علمی اثاثہ جات کی تنظیم کے سربراہ کے انتخاب میں چین کے حصہ لینے میں رکاوٹ ڈالنے کا مقصدکیا ہے ؟سی آر آئی کا تبصرہ

اگلے ہفتے عالمی علمی اثاثہ جات کی تنظیم کے ڈائریکٹر جنرل  کا انتخاب ہورہاہے جس  کیلئے چین سمیت دیگر ممالک نے اپنے اپنے امیدوار نامزد کیے ہیں۔

اظہار رائے کی آزادی اور میڈیا کے پیشہ ورانہ اخلاقی قواعد و ضوابط

عمومی طور پر میڈیا اداروں کے لیے ایک جملہ استعمال کیا جاتا ہے کہ ہم آزادی اظہار کے داعی ہیں۔ 

انسداد وبا کے دوران چین کی کارکردگی پر عالمی ادارہ صحت کے ماہر کا تبصرہ

چوبیس تاریخ کو کووڈ-۱۹ کے حوالےسے چین اور عالمی ادارہ صحت کے ماہرین پر مشتمل مشترکہ تحقیقاتی گروپ نے بیجنگ میں ایک پریس کانفرنس  کا انعقاد کیا ۔

چین کی ترقی کے امکانات سے جتنا زیادہ استفادہ کیا جائے گا، اتنی ہی عالمی معیشت مستحکم ہوگی، سی آر آئی کا تبصرہ

تیئیس تاریخ کو چین میں ایک بے مثال ویڈیو کانفرنس منعقد ہوئی، جس میں شرکا کی تعدد ایک لاکھ ستر ہزار رہی ۔ 

اتحاد سب سے طاقتور ہتھیار ہے ، سی آر آئی کا تبصرہ

حال ہی میں چینی صدر شی جن پھنگ نے امریکہ کے گیٹس فانڈیشن کے کو-چیئرمین بل گیٹس کے خط کے جواب میں ایک  مرتبہ پھر  بنی نوع انسان کے ہم نصیب معاشرے کا ذکر کیا ۔

HomePrev...45678910...NextEndTotal 36 pages